Kaifi Azmi Poetry کیفی عضمی کی شاعری

  • جو شخص بہانہ بنانے میں بہت اچھا ہو ، وہ کسی اور کام میں اچھا نہیں ہو سکتا
  • پیسہ بدترین آقا ہے، مگر بہترین غلام بھی ہے
  • کسی فرد یا قوم کو برباد کرنا ہے تو اس کی امید کو مار ڈالیے اور اگر اسے تعمیر کرنا ہے اس کی امید کا دیا روشن کیجئے
  • کامیابی سوچ سے ملتی ہے
  • زندگی کی دوڑ میں دوسروں سے آگے نکلنے کیلئے تیز چلنا ضروری نہیں، بلکہ ہر رکاوٹ کے باوجود چلتے رہنا اور مسلسل چلتے رہنا ضروری ہے
  • جب باتیں آمنے سامنے ہوتی ہیں تو جھوٹ اور غلط فہممی کا خاتمہ ہو جاتا ھے
  • بہت اونچے پہاڑ پر چڑھنے کے لئیے قدم آہستہ آہستہ اٹھانا پڑتے ہیں
  • تین چیزیں نیکی کی بنیاد ہیں، تواضع بے توقع, سخاوت بے منت اور خدمت بے طلبِ مکافات
  • غربت اور افلاس کی وجہ پیداوار کی کمی نہیں، بلکہ اسکی غلط تقسیم ہے
  • دولت ہونے سے آدمی اپنے آپ کو بھول جاتا ہے اور دولت نہ ہونے سے لوگ اس کو بھول جاتے ہیں
  • مصروف زندگی نماز کو مشکل بنا دیتی ہے , لیکن نماز مصروف زندگی کو بھی آسان بنا دیتی ہے
  • گناہ کو پھیلانے کا ذریعہ بھی مت بنو, کیونکہ ہوسکتا ہے آپ تو توبہ کرلو, لیکن جس کو آپ نے گناہ پر لگایا ہے وہ آپ کی آخرت کی تباہی کا سبب بن جائے
  • اپنی زندگی میں ہر کسی کو اہمیت دو, جو اچھا ہوگا وہ خوشی دے گا اور جو برا ہوگا وہ سبق دے گا
  • درخت جتنا اونچا ہو گا اس کا سایہ اتنا ہی چھوٹا ہو گا, اس لیے اونچا بننے کی بجائے بڑا بننے کی کوشش کرو
  • جو شخص کوشش اور عمل میں کوتاہی کرتا ہے, پیچھے رہنا اس کا مقدر ہے
  • جو لوگ میانہ روی اختیار کرتے ہیں, کسی کے محتاج نہیں ہوتے
  • حقیقی بڑا تو وہ ہے جو اپنے ہر چھوٹے کو پہچانتا ہوں اور اس کی ضروریات کا خیال رکھتا ہو

May 28, 2018
121
3
18
Karachi
#1
جھکی جھکی سی نظر بے قرار ہے کہ نہیں

جھکی جھکی سی نظر بے قرار ہے کہ نہیں
دبا دبا سا سہی دل میں پیار ہے کہ نہیں

تو اپنے دل کی جواں دھڑکنوں کو گن کے بتا
مری طرح ترا دل بے قرار ہے کہ نہیں

وہ پل کہ جس میں محبت جوان ہوتی ہے
اس ایک پل کا تجھے انتظار ہے کہ نہیں

تری امید پہ ٹھکرا رہا ہوں دنیا کو
تجھے بھی اپنے پہ یہ اعتبار ہے کہ نہیں
 
May 28, 2018
121
3
18
Karachi
#2
شور یوں ہی نہ پرندوں نے مچایا ہوگا

شور یوں ہی نہ پرندوں نے مچایا ہوگا
کوئی جنگل کی طرف شہر سے آیا ہوگا

پیڑ کے کاٹنے والوں کو یہ معلوم تو تھا
جسم جل جائیں گے جب سر پہ نہ سایہ ہوگا

بانیٔ جشن بہاراں نے یہ سوچا بھی نہیں
کس نے کانٹوں کو لہو اپنا پلایا ہوگا

بجلی کے تار پہ بیٹھا ہوا ہنستا پنچھی
سوچتا ہے کہ وہ جنگل تو پرایا ہوگا

اپنے جنگل سے جو گھبرا کے اڑے تھے پیاسے
ہر سراب ان کو سمندر نظر آیا ہوگا​
 
May 28, 2018
121
3
18
Karachi
#3
جو وہ مرے نہ رہے میں بھی کب کسی کا رہا

جو وہ مرے نہ رہے میں بھی کب کسی کا رہا
بچھڑ کے ان سے سلیقہ نہ زندگی کا رہا

لبوں سے اڑ گیا جگنو کی طرح نام اس کا
سہارا اب مرے گھر میں نہ روشنی کا رہا

گزرنے کو تو ہزاروں ہی قافلے گزرے
زمیں پہ نقش قدم بس کسی کسی کا رہا​
 
May 28, 2018
121
3
18
Karachi
#4
Chandni Raat Bari Der Ke Baad

Chandni Raat Bari Der Ke Baad Ayi
Yeh Mulaqat Bari Der Ke Baad Ayi

Aaj Aye Hain Woh Milne Ko Bari Der Ke Bad
Aaj Ki Raat Bari Der Ke Baad Ayi​
 
May 28, 2018
121
3
18
Karachi
#5
Tum Itanaa Jo Muskuraa Rahe Ho

Tum Itanaa Jo Muskuraa Rahe Ho
Kyaa Gam Hai Jis Ko Chhupaa Rahe Ho

Aa.Nkho.N Me.N Namii Ha.Nsii Labo.N Par
Kyaa Haal Hai Kyaa Dikhaa Rahe Ho

Ban Jaaye.Nge Zahar Piite Piite
Ye Ashk Jo Piite Jaa Rahe Ho

Jin Zakhmo.N Ko Vaqt Bhar Chalaa Hai
Tum Kyo.N Unhe.N Chhe.De Jaa Rahe Ho

Rekhaao.N Kaa Khel Hai Muqaddar
Rekhaao.N Se Maat Khaa Rahe Ho​
 
May 28, 2018
121
3
18
Karachi
#6
Sunaa Karo Merii Jaa.N In Se Un

Sunaa Karo Merii Jaa.N In Se Un Se Afasaane
Sab Ajanabii Hai.N Yahaa.N Kaun Kis Ko Pahachaane

Yahaa.N Se Jald Guzar Jaao Qaafile Vaalo.N
Hai.N Merii Pyaas Ke Phuu.Nke Hue Ye Viiraane

Merii Junuun-E-Parastish Se Ta.Ng Aa Gaye Log
Sunaa Hai Ba.Nd Kiye Jaa Rahe Hai.N But-Khaane

Jahaa.N Se Pichhale Pahar Ko_Ii Tashnaa-Kaam Uthaa
Vahii.N Pe To.De Hai.N Yaaro.N Ne Aaj Paimaane

Bahaar Aaye To Meraa Salaam Kah Denaa
Mujhe To Aaj Talab Kar Liyaa Hai Seharaa Ne

Sivaa Hai Huqm Ki "Kaifi" Ko Sang-Saar Karo
Masiihaa Baithe Hai.N Chhup Ke Kahaa.N Khudaa Jaane​
 

Forum statistics

Threads
1,024
Messages
5,065
Members
155
Latest member
Jawad Jamil

Latest posts